جلسہ عام کا نوٹس

فضل کلاتھ ملز لمیٹڈ(کمپنی)

اطلاع برائے اجلاس عام 2018

بذریعہ نوٹس ہذا مطلع کیا جاتا ہے کہ میسرز فضل کلاتھ ملز لمیٹڈ کے شئیر ہولڈرز کا 53واں سالانہ اجلاسِ عام بروز ہفتہ 27اکتوبر 2018کو بوقت 11:00بجے صبح E/110خیابان جناح لاہور کینٹ، ڈیفنس موڑ، لاہور میں مندرجہ ذیل امور کی انجام دہی کیلئے منعقد ہوگا ۔

عمومی کاروبار:

1۔کمپنی کے گذشتہ سالانہ اجلاس عام منعقدہ 28اکتوبر 2017کی توثیق ۔
2۔ 30 جون 2018کو مکمل ہونے والے سال کیلئے کمپنی کے مالی حسابات معہ آڈ یٹرز اور ڈائریکٹرز کی رپورٹس کی وصولی ، غور و خوض اور منظوری ۔
3۔30جون 2018کو مکمل ہونے والے سال کیلئے کمپنی کے عام حصص پر بحساب منافع منقسمہ کی منظوری اور اعلان ۔ڈائریکٹرز نے عام حصص پرفی 8.50 روپے(2017یعنی 5.25روپے فی حصص کی شرح سے)حتمی نقد منافع منقسمہ کی سفارش کی ہے ۔
4۔ آئندہ مالی سال مختتمہ 30جون 2019کیلئے آڈیٹرز کی تقرری اور اُن کے مشاہرہ کا تعین ۔ میسرز KPMGتاثیرہادی اینڈ کمپنی چارٹرڈ اکاؤنٹنٹس لاہور سبکدوش ہوگئے ہیں اور اہلیت کی بنیاد پر دوبارہ تقرری کیلئے اپنی خدمات پیش کی ہیں ۔
5۔ چئیرمین کی اجازت سے دیگر امور پر کاروائی ۔

خصوصی کاروبار

-6 کمپنیز ایکٹ 2017 کے سیکشن 199کی روشنی میں ایسوسی ایٹڈ کمپنی فاطمہ انرجی لمیٹڈ (FEL)میں 2,000ملین روپے کی سرمایہ کاری کے معاملہ پر شیئر ہولڈرزکا غور و خوض اور بلایا بہ ترمیم پاس کرنااور کمپنی کو FELمیں ایڈوانس/لون کے ذریعے سرمایہ کاری کا اختیار دینا۔

’’قرار پایا کہ کمپنیز ایکٹ 2017کے سیکشن 199کی روشنی میں کمپنی کو فاطمہ انرجی لمیٹڈ میں 2,000,000,000/- روپے(مبلغ دو ہزار ملین روپے صرف) تک کی رقم بحساب مارک اپ سیکشن 199 کے مطابق جو قرضہ کی فراہمی کی تاریخ سے دس(10)سال کے عرصہ کے اندر قابل واپسی ہوگا‘سرمایہ کاری کرنے کااختیار ہے اور سرمایہ کاری کی معیاد 15 اکتوبر 2021 تک ہو گی

’مزیدقرار پایا کہ کمپنی کے کسی ڈائریکٹراورکمپنی کے مجاز افسران محمداعظم چیف فنانانشل آفیسر اور اسد مصطفی کمپنی سیکرٹری کوانفرادی طور پر کمپنی کے بہترین مفاد میں اس مد میں تمام ضروری اقدامات بشمول تمام دستاویزات‘ معاہدات اوراس کے ضمنی امور کی انجام دہی کا اختیار دیا جاتا ہے‘‘

7۔ کمپنیز ایکٹ 2017ء کے سیکشن(3) 134 کے مطابق خصوصی کاروبار کے بارے میں بیان لف ہے۔

نوٹس :

1۔کمپنی کی شئیرز ٹرانسفر بک 19اکتوبر 2018 تا 26اکتوبر 2018(بشمول دونوں دن ) بند رہیں گی۔ فزیکل ٹرانسفر / سی ڈی سی ٹرانزیکشن آئی ڈیز جو کہ مورخہ 18اکتوبر 2018کو دفتری اوقات کے دوران کمپنی کے رجسٹرار ویژن کنسلٹنگ لمیٹڈ 3-C، LDAفلیٹس لارنس روڈ لاہور کے دفتر پہنچ جائیں گے ،اجلاس میں شرکت کیلئے شئیرز ہولڈر ز ووٹ کا حق شمار ہوں گے ۔

2 ۔ ایک ممبر اپنی جگہ پر ووٹ دینے اور شراکت کرنے کیلئے کسی دوسرے ممبر کو اپنا پراکسی مقرر کرسکتا ہے ۔ اور سی ڈی سی شئیرز ہولڈ رز کو اپنے قومی کمپیوٹر ائزڈ شناختی کارڈ (CNIC) / پاسپورٹ کی مصدقہ نقل لف کرنا ہو گی ۔ مہر شدہ ، دستخط شدہ پراکسیز اجلاس کے آغاز سے 48گھنٹے قبل کمپنی کے رجسٹرڈ آفس میں پہنچ جائیں ۔ کارپوریٹ ممبرز کی نمائندگی کی صورت میں ممبران ضروری دستاویزات ہمراہ لائیں ۔

3۔وہ ممبرا ن جو بذریعہ ای میل آڈٹ شدہ مالی سٹیٹمنٹ اورAGMنوٹس وصول کرنے کے خواہش مند ہوں وہ ویب سائیٹ (www.fazalcloth.com) پر اس سہولت کی دستیابی کے پیش نظر موجود Standard Request Formپر تحریری طورپر ارسال کریں ۔

4۔ سی ڈی ایس سیکورٹیز اور سی ڈی ایس شراکت کی صورت میں اگر شئیرز رجسٹرارکو اس سے قبل فراہم نہ کی گئیں ہوتو شئیرز ہولڈرز سے درخواست ہے کہ وہ درج ذیل معلومات اور دستا ویزات کی نشا ندہی/فراہمی کریں۔

a: پتہ جات میں کوئی تبدیلی

b: نئے کمپنیز ایکٹ 2017کے سیکشن 242کی تصریحات کے مطابق شئیرز ہولڈرز کو اپنے بنک اکاؤنٹ کی تفصیل یعنی بنک اکاؤنٹ کا نام ، بنک اکاؤنٹ نمبر / آئی بی اے این نمبر ، بنک کا نام ، برانچ ، ایڈریس اور سیل/ لینڈ لائن نمبر فراہم کریں تاکہ اُ ن کے ڈیویڈنڈ براہ راست اُن کے بنک میں آن لائن منتقل کئیے جاسکیں ۔ شئیر ہولڈرز سے درخواست ہے کہ وہ مورخہ 27اکتوبر 2018سے قبل کمپنی کے شئیر رجسٹرار کو مطلوبہ معلومات فراہم کریں ۔ بصورت دیگر کمپنی ڈیویڈنڈ اُن کے بنک اکاؤنٹ میں بھیجنے پر روکنے پر مجبور ہوجائے گی ۔

c: یہ کاپیاں ارسال کرتے وقت کارپوریٹ ادارہ کا نیشنل ٹیکس نمبر (NTN) یا NTN سرٹیفیکیٹ اور فولیو نمبر لازماً ارسال کریں ۔

d: انکم ٹیکس آرڈیننس کے فنانس ایکٹ 2017-18کے سیکشن 150کے تحت فائلر یا نان فائلر شئیر ہولڈرز کو ڈیویڈنڈ انکم کی مد میں بحساب 15%اور20%بالترتیب ٹیکس ادا کرنا ہوگا ۔ لہٰذا 10نومبر 2018کو کیش ڈیویڈ نڈ کی ادائیگی سے قبل شئیر ہولڈرز فیڈرل بورڈ آف ریونیو (FBR)کی ویب سائیٹ www.fbr.gov.pkپر فراہم شدہ ایکٹو ٹیکس پئیر لسٹ (ATL)سے اطمینان کرلیں کہ اُن کا نام اس لسٹ میں شامل ہے۔ بصورت دیگر اُن کے کیش ڈیویڈ نڈ میں 15%کی بجائے 20%ٹیکس کٹوتی کی جائے گی ۔

e : FBRکی وضاحت کے مطابق ہر شئیر ہولڈرخواہ وہ فائلر ہے یا نان فائلر انفرادی تصور ہوگا اور اُن کے ٹیکس کی کٹوتی شئیر ہولڈرز اورہر جوائنٹ ہولڈر کی طرف سے 17 اکتوبر 2018سے 10ایام کے اندر ہمارے شئیر رجسٹرار کو فراہم کی گئیں معلومات یا اگر بغیر نوٹیفیکیشن ہر جوائنٹ ہولڈر برابر شئیرز شمار کئیے جائیں گے۔

فولیو / CDCاکاؤنٹ نمبر

کل شئیرز

پرنسپل شئیر ہولڈرز نام اور CNICنمبر

شئیر ہولڈنگ کا تناسب (تعداد شئیرز)

جوائنٹ شئیر ہولڈرز نام اور CNICنمبر

شئیر ہولڈ نگ کا تناسب (تعداد شئیر ز )

f: زکوۃ کی کٹوتی سے استثناء : وہ ممبران جو انکم ٹیکس کی کٹوتی سے استثناء چاہتے ہیں یا اس کے کم ریٹ پر کٹوتی کے اہل ہوں اُن سے درخواست ہے کہ وہ اپنا ٹیکس ایگزیمپشن (محصول کی وصولی سے استثناء ) کا کارآمد سرٹیفکیٹ یا ضروری دستاویزات جمع کروائیں ، جس طرح کا بھی معاملہ ہو ۔ وہ ممبران جو زکوۃ کی کٹوتی سے مثتثنیٰ ہوں اُن سے درخواست ہے کہ وہ نان ڈیڈکشن آف زکوٰۃ کا حالیہ سرٹیفیکیٹ جمع کروائیں ۔

g: غیر ضروری منافع اور بونس:

حصص یافتگان جو کسی وجہ سے اپنا ڈیویڈنڈ یا بونس کلیم نہیں کرسکے یا اپنا فزیکل شئیر حاصل نہیں کیا ہے نصیحت کی جاتی ہے کہ ہمارے شئیر رجسٹرار سے رابطہ کریں ۔ نوٹ فرمالیں کہ کمپنیز ایکٹ 2017کے قانون 244کی تعمیل میں مقررہ طریقہ کار کی تکمیل کے بعد مقررہ تاریخ اور قابل ادائیگی سے تین سال کی مدت کیلئے تمام غیر دعوی منافع وفاقی حکومت کو جمع کرائیں جائیں گے اور حصص کی صورت میں تمام ڈیویڈ نڈ ایس ای سی پی کو جمع کروائے جائیں گے ۔

h:کسی بھی معلومات / استفسار کیلئے شئیر ہولڈرز کو مذکورہ بالاہیڈ آفس سے کمپنی سیکریٹری اور / یا شئیر رجسٹرار ویژن کنسلٹنگ لمیٹڈ 3-C، LDFفلیٹس لارنس روڈ لاہور ۔ فون نمبر: 36283096-97 (042) کے مسٹر عبدالغفار غفاری سے رابطہ کرسکتے ہیں ۔

i: سال مختتمہ 30جون 2018کیلئے آڈٹ شدہ فنانشل سٹیٹمنٹ کمپنی کی ویب سائیٹپر دستیاب ہے ۔

27اکتوبر 2018کو منعقد ہونے والے کمپنی کے سالانہ اجلاس عام میں اس سٹیٹمنٹ کے مندرجات پر غور و خوض کیا جائے گا ۔

:jالیکٹرونک ووٹنگ:

کمپنی ایکٹ 2017 کے سیکشن 143-145 کے تحت شیئر ہولڈرز اجلاس میں e-voting کے ذریعے رائے کا اظہار کر سکتے ہیں۔

مذکورہ بالا خصوصی کاروبار نمبر6 کے متعلق کمپنیز ایکٹ 2017 کے سیکشن134(3) کے تحت تفصیل

(i) ایسوسی ایٹڈ کمپنی یا ایسوسی ایٹڈ انڈرٹیکنگ کا نام مع Criteriaجس کی بنیادپر ایسوسی ایٹڈ تعلق قائم ہوئے:

فاطمہ انرجی لمیٹڈ (FEL) ایک ایسوسی ایٹڈ انڈرٹیکنگ درج ذیل ڈائریکٹرز پر مشتمل ہے۔

1: مسٹررحمن نسیم

2: مسٹر فیصل احمد

3: مسٹر فضل احمد شیخ

4: مسٹر فہد مختار

(ii) لون یا ایڈوانس کی رقم:

مبلغ2,000,000,000/-روپے تک (مبلغ دو ہزار ملین پاکستانی روپے صرف)

(iii) قرضہ یا ایڈوانس دینے کا مقصد‘ جس سے سرمایہ کار کمپنی اور اس کے ممبران کوفائدہ ہو سکتا ہے:

انویسٹی کمپنی کو قرض دہندہ بینکوں سے قرضہ کی فراہمی کو آسان بنانااور قرضہ کی رقم 120 MW پراجیکٹ کے ڈیزائن، خرید، تعمیرات، ٹیسٹنگ اور تکمیل میں مدد دے گیْ کمپنی کو اس قرضہ پر سود کی آمدن ہو گی۔چونکہ کمپنی ایکوٹی میں حصہ دار ہے لہذا پراجیکٹ کی تکمیل اور آپریشن ہونے پر منافع کی حقدار ہوگی۔

-(iv) مذکورہ ایسوسی ایٹڈ کمپنی یا ایسوسی ایٹڈ انڈرٹیکنگ کو جاری ہونے والے کسی بھی لون کی صورت میں مکمل تفصیل :

مبلغ پانچ سو ملین روپے دیے جا چکے ہیں جسکی منظوری شئیر ہولڈر ز میں 30 مئی 2017 کو دی تھی۔

-(v) ایسوسی ایٹڈ کمپنی یا ایسویسی ایٹڈ انڈر ٹیکنگ کی تازہ ترین فنانشل پوزیشن بشمول بیلنس شیٹ اور پرافٹ اور لاس اکاؤنٹ:

حالیہ تازہ ترین غیر آڈٹ شدہ فنانشل سٹیٹمنٹ کے مطابق برائے مالی سال30 جون 2018تک کمپنی کے کل اثاثے 28,344 ملین روپے‘ کل واجبات 22,115ملین روپے اور ٹیکس کے بعد نقصان 120.2ملین روپے ہیں۔

-(vi) سرمایہ کار کمپنی کی اوسط قرضہ لاگت یا کراچی انٹر بینک کی طرف سے متعلقہ عرصہ کے لیے پیش کردہ نرخ:

KIBOR+1%تقریباً

-(vii) شرح منافع‘ مارک اپ‘ فیس یا کمیشن وغیرہ جو چارج کیا جائے گا: کمپنی کے قرضہ کیااوسط قیمت 0.25 جس کا تعین ہر ششماہی کے اختتام پر کیا جاے گا البتہ موجودہ ششماہی کے ا ختتام پرKIBOR+1.5% چارج ہو گا ۔

-(viii) فنڈز کے ذرائع جہاں سے لون اور ایڈوانس دیئے جائیں گے:

فنڈز کمپنی کے چلتے کاروبار سے فراہم کئے جائیں گے۔

-(ix) اگر قرضہ یا لون مستعار رقم سے دیا جائے تو:

(لاگو نہیں)

-(x) اگر لون یا ایڈوانس سیکورٹیز میں قابل تبادلہ ہوں گی تو تبادلہ فارمولا حالات جس میں تبادلہ ضروری ہوا اور تبادلہ کا وقت۔

لون قابل تبادلہ نہیں ہے۔

-(xi) سرمایہ کارکمپنی کی جانب سے دیئے گئے لون یا ایڈوانس کی واپسی کا طریقہ کار اور شرائط:

لون دس(10) سال کے عرصہ میں 20ششماہی اقساط میں واپس ہوگا ۔ واپسی میں ناکامی پرواجبات کا1 % ا ضافی چارج کیا جائے گا۔

-(xii) مجوزہ سرمایہ کاری کی مد میں ایسوسی ایٹڈ کمپنی یا ایسوسی ایٹڈ انڈر ٹیکنگ میں شامل یا شامل کئے جانے والے تمام معاہدہ جات کی نمایاں خصوصیات نکات نمبر 7 اور 11 کے مطابق

-(xiii) ایسوسی ایٹڈ کمپنی یا ایسوسی ایٹڈ انڈر ٹیکنگ یا زیر غور ٹرانزیکشن میں ڈائریکٹرز‘ سپانسرز‘ میجارٹی شیئر ہولڈرز اوران کے رشتہ داروں کی بالواسطہ یا بلاواسطہ دلچسپی:

ڈائریکٹر ز اپنے ذاتی شیئر ز کے علاوہ کوئی خاص دلچسپی نہیں رکھتے۔

-(xiv) ٹرانزیکشن کی سمجھ بوجھ کی خاطر ممبرز کے لئے کوئی دیگر اہم تفصیل‘ اور: کوئی نہیں

-(xv) ایسوسی ایٹڈ کمپنی یا ایسوسی ایٹڈ انڈر ٹیکنگ کے آپریشن کا آغاز نہیں ہوا ہے۔ بحوالہ متذکرہ بالا میں اضافہ کے لئے درج ذیل مزید معلومات درکار ہیں:

-(i) پروجیکٹ کی تصریحات اور اس کے تشکیل سے اب تک کی تاریخ:

فضل کلاتھ ملز لمیٹڈ (FCML)مع ریلائنس ویونگ ملز لمیٹڈ (RWML)‘ فاطمہ ہولڈنگز لمیٹڈ اور فضل ہولڈنگز پرائیویٹ لمیٹڈ ایسوسی ایٹڈ کمپنیز (اجتماعی سپانسرز)120 میگاواٹ پاور پروجیکٹ کی تشکیل کا ارادہ رکھتے ہیں اوراس مقصد کے لیے FEL بنائی گئی جو فیول آف بیگیج اور در آمد شدہ کوئلہ کا استعمال کرتے ہوئے بجلی کی پیداوار اور ترسیل کرے گی۔پروجیکٹ Independent Power Procedure (IPP)کے ذریعہ چلایا جائے گا۔پروجیکٹ ملک بھر میں بجلی کے شارٹ فال کی کمی کوپورا کرنے کے لئے اہم کردار ادا کرے گا۔

-(ii) تاریخ آغاز اور متوقع تاریخ تکمیل:

 

آغاز تاریخ تعمیر

10فروری 2014

 

کام کی تاریخ تکمیل (متوقع)

سال 2018 کا آخر

 

-(iii) مدت جب پراجیکٹ کمرشل آپریشن پر کام کرے گا

کمرشل آپریشن تاریخ (متوقع)

سال 2018 کا آخر

-(iv) متوقع ریٹرن شروع ہونے کا دورانیہ:

سال 2018 کا آخرتک

-(v) کیش اورنان کیش رقوم کے مابین پروموٹرز کی طرف سے سرمایہ شدہ یا سرمایہ کاری کئے جانے والے فنڈز:

قرض کیش کی بنیاد پر دیا جائے گا۔

-(xvi) گزشتہ تین سالوں کی فی حصص آ مدن

30 جون :2016 : (.09) روپے فی حصص

30 جون 2017 : (0.104) روپے فی حصص

30 جون 2018 : (0.21) روپے فی حصص

-(xvii)بریک اپ ما لیت فی حصص

9.5 روپے فی حصص تقریباًٍٍٍ

-(xviii)پہلے سے کی گئی سرمایہ کاری کی کارکردگی

حصص میں 1,374 ملین روپے کی سرمایہ کاری کی وجہ سے 137,421,349شیئرزکمپنی کو جاری کیئے جا چکے ہیں

بحکم بورڈ آف ڈائریکٹرز

اسد مصطفی ۔کمپنی سیکرٹری